ONLINE ORDER
Muhammad Nadeem Bhabha
Search Maen Kahin Aur Ja Nahin Sakta | میں کہیں اور جا نہیں سکتا
Nazmen - نظمیں

مجھ کو یاد کر لینا

خزاں کے زرد پتوں پر
کوئی بھولی کہانی یا کسی کی زندگی کا
جب کوئی بھی باب تم لکھنا
تو مجھ کو یاد کر لینا
کبھی تم شام کے چپ چاپ اور سہمے ہوئے کونے میں
تنہائی کے ڈر میں مبتلا ہونا
تو مجھ کو یاد کرلینا
کبھی تم پر دسمبر لمبی راتوں کے اگر پتھر گرائے
اور تم سے کچھ نہ بن پائے
کسی بھی وصل کے لمحے کو پھر تم دھیان میں لانا
تو مجھ کو یاد کر لینا
میں اک احساس ہوں
دیکھو وہی احساس ہوں میں جو
تمہاری زندگی کی چند راتوں میں تمہارا تھا
میں آوارہ کرن ہوں
جو کہ ویرانوں میں قبروں پہ سخاوت کرنے لگتی ہے
کبھی تم روشنی کی چاہ میں حد سے گزر جانا
تو مجھ کو یاد کر لینا