ONLINE ORDER
Muhammad Nadeem Bhabha
Search Haal | حال
Ghazlen - غزلیں

اتارنی ہی نہ پڑ جائے اپنی کھال مجھے

اُتارنی ہی نہ پڑ جائے اپنی کھال مجھے
میں عشق ہو ں سو مرے یار تُو سنبھال مجھے
میں کیفیّت کی غلامی سے ہو چکا آزاد
ترا فراق بھی ہے صورتِ وصال مجھے
ہر ایک سمت مرے واسطے ہوئی قِبلہ
تِرے علاوہ کسی کا نہیں خیال مجھے
میں لاتخف کی اذاں سن کے محوِ سجدہ ہوں
تِرا جلال بھی ہے صورتِ جمال مجھے
ابھی تماشا گہہِ دنیا میں نہیں آنا
ابھی تو کھیلتے رہنا ہے بس دھمال مجھے