ONLINE ORDER
Muhammad Nadeem Bhabha
Search Maen Kahin Aur Ja Nahin Sakta | میں کہیں اور جا نہیں سکتا
Ghazlen - غزلیں

کبھی درخت کبھی جھیل کا کنارا ہے

کبھی درخت کبھی جھیل کا کنارا ہے
یہ ہجر ہے کہ محبت کا استعارا ہے
تم آئو اور کسی روز اس کو لے جائو
بس ایک سانس ہے اس پر بھی حق تمہارا ہے
خدائے عشق گِلہ تجھ سے ہے جہاں سے نہیں
مرے لہو میں محبت کو کیوں اُتارا ہے
یہ سوچ لینا مجھے چھوڑنے سے پہلے تم
تمہارا عشق مرا آخری سہارا ہے
ابھی تو کھال ادھڑنی ہے اس تماشے میں
ابھی دھمال میں جوگی نے سانس ہارا ہے