ONLINE ORDER
Muhammad Nadeem Bhabha
Search Haal | حال
Ghazlen - غزلیں

حسن ہمہ تن گوش ہے عشق سلام کرے

حسن ہمہ تن گوش ہے عشق سلام کرے
سائیں سکھائے بولنا سائیں کلام کرے
مشرق مغرب آپ ہے آپ شمال جنوب
بے طرفا ا ب زندگی کس کے نام کرے
سائیں آگے کردیا اپنے آپ کو ڈھیر
چاہے تو ہم خاص ہیں چاہے عام کرے
حسن کی پانچ کہانیاں اور کردار ہیں سات
اِن آگے اک دیس میں دل بِسرام کرے
دل میں اِک دلدار ہے اُس سے جس کی پریت
اُس کے حرم میں جا بسے اور احرام کرے
ایک تو جاگے رات بھر روئے زار قطار
ایک قلندر رقص بھی شام کی شام کرے
دوست دکھوں کے دور میں رحمت کا جھونکا
آئے عرب کے دیس سےہند قیام کرے