ONLINE ORDER
Muhammad Nadeem Bhabha
Search Haal | حال
Ghazlen - غزلیں

آنکھ اٹھا کر تجھے دیکھا نہ پکارا میں نے

آنکھ اُٹھاکر تجھے دیکھا نہ پکارا میں نے
ہجر کی طرح تِرا وصل گزارا میں نے
کیا فقط میری ادب سے ہی پرکھ ہو گی یہاں
وہ جو اِک عشق تِرے عشق میں ہارا میں نے
تُونے جو قرض کی صورت میں جدائی دی تھی
نسل در نسل وہی قرض اُتارا میں نے
ایک مانوس سی آواز نے تھاما مجھ کو
خود کو اک بار محبت سے پکا را میں نے
کیا کروں کوئی نظر آتا نہیں تیرے سِوا
کیا بتائوں کہ کِیا کیسا نظارا میں نے